ڈاکٹر احسان 53

ٹانک میں عوام رضاکارانہ طور پر صحتی مراکز جا کر کرونا وائرس سے محفوظ رہنے کیلئے ویکسین لگا رہے ہیں۔ڈاکٹر احسان بیٹنی

عوام کو بلا کسی تفروق ویکسینز لگائی جا رہی ہے جس میں اب تک ہزاروں لوگ وائرس سے ویکسینیٹ ہو چکے ہے۔میڈیا سے گفتگو

ٹانک(نمائندہ خصوصی)گلوبل ٹائمز میڈیا رپورٹ کے مطابق ٹانک میں عوام رضاکارانہ طور پر صحتی مراکز جاکر کرونا وائرس سے محفوظ رہنے کیلئے ویکسین لگا رہے ہیں،میڈیا کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے ڈی ایچ او ٹانک ڈاکٹر احسان بیٹنی نے کہا کہ ہزاروں لوگ ویکسینٹ ہو چکے ہیں۔گلوبل ٹائمز میڈیا تفصیلات کے مطابق ملک کے دیگر حصوں کی طرح ٹانک میں بھی مختلف مراکز صحت پر کورونا وائرس جیسے موضی مرض کے خلاف ویکسینشن کا عمل تیزی سے جاری ہے۔عوام کو بلا کسی تفروق ویکسینز لگائی جا رہی ہیں جس میں اب تک ہزاروں لوگ کورونا وائرس سے ویکسینیٹ ہو چکے ہیں۔ٹانک کے دوسرے مراکز صحت کیطرح رنوال میں بھی عوام کو ویکسین لگانے کا سلسلہ جاری ہے۔ اس ضمن میں ڈی ایچ او ٹانک احسان بیٹنی کا کہنا تھا کہ ہیلتھ عملہ کورونا وائرس کی حفاظتی تدابیر کے تحت ٹانک کو اس موضی مرض سے محفوظ بنانے کے لیے مصروف عمل ہے۔ روزانہ کی بنیاد پر رجیسٹریشن کے بعد ٹانک کے مختلف مراکز صحت پر ویکسینشین کا عمل جاری ہے۔ اس ویکسینشن میں کسی قسم کا کوئی بھی سائڈ ایفیکٹ نہیں۔ عوام افواہوں پر کان نہ دھریں اور خود کو اور اپنے خاندان کو محفوظ بنانے کے لیے ویکسینیٹ کروائیں۔ان کا کہنا تھا کہ عوام میں اگاہی مہم بھی جاری ہے جس کے باعث کافی لوگ متعین کردہ مراکز صحت پر کورونا وائرس کے ٹیکہ جات کے لیے خود تشریف لا رہے ہیں۔کورونا ویکسین عام عوام میں 30 سال سے اوپر کی عمر کے افراد کو جبکہ 30 سال سے کم عمر سرکاری ملازمین کو بھی یہ ویکسین لگائی جا رہی ہے۔ ڈی ایچ او ٹانک کا مزید کہنا تھا کہ اپنے موبائل کے زریعے 1166 پر اپنا شناختی کارڈ نمبر بھیج کر خود کو اس پروگرام میں رجسٹر کروائیں اور اس موضی مرض سے بچاؤ کے لیے کسی بھی قریبی مرکز صحت پر تشریف لائیں کیونکہ حکومت پاکستان کا یہ عزم ہے کہ ویکسین کو ہاں اور کورونا کو نہ۔ اگر خود کو اور اپنی نسلوں کو محفوظ بنانا ہے تو کورونا ویکسین لگوانی ہو گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں